Ukraine has become a source of tension between the US and Russia

0
1757
Ukraine has become a source of tension between the US and Russia
Ukraine has become a source of tension between the US and Russia

یوکرین امریکہ اور روس کے درمیان کشیدگی اور تناؤ کا باعث بن گیا

Following the interference in the presidential election, Ukraine has become a source of tension and tension between the United States and Russia, with both countries continuing to accuse and threaten each other.

According to the international news agency, US President Joe Biden has expressed anger over Russia’s intervention in Ukraine and said that if Russia takes military action, it will help Ukraine.

US President Joe Biden has urged Russia to refrain from attacks, adding that it would do everything possible to thwart Russian attacks on Ukraine.
It is believed that the US intelligence agency had reported on the basis of intelligence that Russia was planning to invade Ukraine early next year.

Ukraine and NATO have previously threatened to invade Russia.

Russia, meanwhile, has called US threats “interference in the country’s internal affairs” and said that “some people want to attack Russia’s national security under the pretext of attacking Ukraine.”

The conflict between Russia and Ukraine began in 2014, when Russia backed a separatist uprising in Ukraine’s eastern industrial region of Donbass.

صدارتی انتخابات میں مداخلت کے بعد یوکرین امریکہ اور روس کے درمیان کشیدگی اور تناؤ کا باعث بن گیا ہے، دونوں ممالک ایک دوسرے پر الزامات اور دھمکیوں کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر جو بائیڈن نے یوکرین میں روس کی مداخلت پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر روس نے فوجی کارروائی کی تو وہ یوکرین کی مدد کرے گا۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے روس پر زور دیا ہے کہ وہ حملوں سے باز رہے، انہوں نے مزید کہا کہ وہ یوکرین پر روسی حملوں کو ناکام بنانے کی ہر ممکن کوشش کرے گا۔
خیال کیا جاتا ہے کہ امریکی خفیہ ایجنسی نے انٹیلی جنس کی بنیاد پر اطلاع دی تھی کہ روس اگلے سال کے شروع میں یوکرین پر حملہ کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔

یوکرین اور نیٹو پہلے بھی روس پر حملہ کرنے کی دھمکی دے چکے ہیں۔

دریں اثنا، روس نے امریکی دھمکیوں کو “ملک کے اندرونی معاملات میں مداخلت” قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ “کچھ لوگ یوکرین پر حملے کے بہانے روس کی قومی سلامتی پر حملہ کرنا چاہتے ہیں۔”

روس اور یوکرین کے درمیان تنازعہ 2014 میں شروع ہوا، جب روس نے یوکرین کے مشرقی صنعتی علاقے ڈونباس میں علیحدگی پسند بغاوت کی حمایت کی۔