Trump Announces Deployment of Armed Forces in Washington

0
616
Trump Announces Deployment of Armed Forces in Washington
Trump Announces Deployment of Armed Forces in Washington

US President Donald Trump has announced the deployment of a large number of armed forces in Washington. Protests and demonstrations continue in several US cities following the violent death of a black citizen by police. In his White House address, President Trump announced the deployment of the Armed Forces, saying that insecurity in Washington is “extremely humiliating. The military will be mobilized to end lawlessness and violence. As President, my first and foremost responsibility.” The responsibility is to protect America and its citizens.

“I am deploying thousands of troops to prevent looting, arson and siege. Those responsible will face heavy fines and long prison terms,” ​​he said. Trump added that justice would be served in the George Floyd case. Earlier, he had asked the state governors to take stern action against the protesters involved in the violence. The president also visited a church near the White House that was set on fire during the protest.

ٹرمپ کا واشنگٹن میں مسلح افواج کی تعیناتی کا اعلان

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے واشنگٹن میں بڑی تعداد میں مسلح افواج کی تعیناتی کا اعلان کیا ہے۔ پولیس کے ذریعہ سیاہ فام شہری کی پرتشدد ہلاکت کے بعد کئی امریکی شہروں میں مظاہرے جاری ہیں۔ وائٹ ہاؤس سے اپنے خطاب میں ، صدر ٹرمپ نے مسلح افواج کی تعیناتی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن میں عدم تحفظ “انتہائی ذلت آمیز ہے۔ لاقانونیت اور تشدد کے خاتمے کے لئے فوج کو متحرک کیا جائے گا۔ بحیثیت صدر ، میری پہلی اور اہم ذمہ داری امریکہ اور اس کے شہریوں کی حفاظت کرنا ہے۔

انہوں نے کہا ، “میں لوٹ مار ، جلاؤ اور محاصرے کی روک تھام کے لئے ہزاروں کی فوج تعینات کر رہا ہوں۔ ان ذمہ داروں کو بھاری جرمانے اور طویل قید کی سزا کا سامنا کرنا پڑے گا۔” ٹرمپ نے مزید کہا کہ جارج فلائیڈ کیس میں انصاف کیا جائے گا۔ اس سے قبل ، انہوں نے ریاستی گورنرز سے کہا تھا کہ وہ تشدد میں ملوث مظاہرین کے خلاف سخت کارروائی کریں۔ صدر نے وائٹ ہاؤس کے قریب واقع ایک چرچ کا بھی دورہ کیا جس کو احتجاج کے دوران آگ لگادی گئی تھی۔