Afghan Citizens Working For Our Military Will Be Welcomed in the United States: Biden

0
987
Afghan Citizens Working For Our Military Will Be Welcomed in the United States: Biden
Afghan Citizens Working For Our Military Will Be Welcomed in the United States: Biden

ہماری فوج کے لئے کام کرنے والے افغان شہریوں کا امریکہ میں خیرمقدم کیا جائے گا: بائیڈن

According to the International News Agency, US President Joe Biden said in response to a question during a press conference at the White House that those who helped the US during the 20-year Afghan war will not be left alone in Afghanistan after the withdrawal of troops.

Joe Biden added that Afghans who helped US troops during the war would be welcome in their country. Those who risked their lives for us cannot be left in Afghanistan.

The Associated Press claims that the Biden administration plans to expel between 20,000 and 100,000 Afghan interpreters and others supporting the US military. Work is underway on their applications for repatriation to the United States. Work on these applications is likely to be completed by August.

It should be noted that Afghan spokesmen and others working with the United States and coalition forces have been holding rallies for the past two months to protect their lives and move to a safer place.

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق ، امریکی صدر جو بائیڈن نے وائٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس کے دوران ایک سوال کے جواب میں کہا کہ 20 سالہ افغان جنگ کے دوران امریکہ کی مدد کرنے والوں کو فوج کی واپسی کے بعد افغانستان میں تنہا نہیں چھوڑا جائے گا۔ .

جو بائیڈن نے مزید کہا کہ جنگ کے دوران امریکی افواج کی مدد کرنے والے افغان بشہریوں کو ان کے ملک میں خوش آمدید کہیں گے۔ جن لوگوں نے ہمارے لئے اپنی جان خطرے میں ڈال دی انہیں افغانستان میں نہیں چھوڑا جاسکتا۔

ایسوسی ایٹ پریس نے دعوی کیا ہے کہ بائیڈن انتظامیہ بیس ہزار سے ایک لاکھ کے درمیان افغان ترجمانوں اور دیگر افراد کو بھی افغانستان سے نکالنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ ان کی امریکہ آمد کے لئے درخواستوں پر کام جاری ہے۔ ممکن ہے کہ ان درخواستوں پر کام اگست تک مکمل ہوجائے گا۔

واضح رہے کہ افغان ترجمان اور دیگر افراد جو امریکہ اور اتحادی افواج کے ساتھ کام کر رہے ہیں گذشتہ دو ماہ سے اپنی جانوں کے تحفظ اور محفوظ مقام پر منتقل ہونے کے لئے ریلیاں نکال رہے ہیں۔