Zardari, Faryal and others will be indicted on August 10 in Park Lane Reference

0
510
Zardari, Faryal and others will be indicted on August 10 in Park Lane Reference
Zardari, Faryal and others will be indicted on August 10 in Park Lane Reference

زرداری ، فریال اور دیگر پر 10 اگست کو پارک لین ریفرنس میں فرد جرم عائد کی جائے گی

احتساب عدالت اسلام آباد نے جمعہ کے روز پارک لین ریفرنس کیس سے بری اور برخاستگی کے لئے آصف علی زرداری کی درخواست مسترد کردی۔

اس معاملے کی سماعت کے لئے عدالت کے دائرہ اختیار سے متعلق سابق صدر کی درخواست کو بھی مسترد کردیا گیا ہے۔ احتساب جج اعظم خان نے عدالت کے فیصلے کا اعلان کیا اور 10 اگست کو آئندہ سماعت پر آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور کو بھی فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا۔

آصف علی زرداری ، ان کی بہن فریال تالپور اور دیگر ملزمان کو پارک لین پرائیویٹ لمیٹڈ اور پارٹینن (پرائیوٹ) لمیٹڈ کی مالی سہولت میں جعلی بینک اکاؤنٹس اور غبن کے الزامات کا سامنا ہے۔

پارٹینن پرائیویٹ لمیٹڈ کے ذریعہ زرداری کی جانب سے قرض میں ملوث ہونے اور اس کے غلط استعمال سے متعلق پارٹ لین کیس کی تحقیقات قومی احتساب آرڈیننس (این اے او) 1999 اور اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ 2010 کے تحت کی جارہی ہے۔

The Accountability Court, Islamabad, on Friday denied a petition from Asif Ali Zardari seeking the acquittal and dismissal of the Park Lane reference case.

The former President’s petition contesting the court’s jurisdiction to hear the matter was also denied. Accountability judge Azam Khan announced the court’s decision and decided to indict Asif Ali Zardari and his sister Faryal Talpur at the next hearing on August 10th.

Asif Ali Zardari, his sister Faryal Talpur and other defendants are charged with corruption through counterfeit bank accounts and misappropriation of the financial facility for Park Lane Private Limited and Parthenon (Pvt) Limited.

The Park Lane case is under investigation under various sections of the National Accountability Ordinance (NAO) 1999 and the Anti-Money Laundering Act 2010 for Zardari’s alleged involvement in a loan and his embezzlement by Parthenon Private Limited.