TTP has nothing to do with Islamic Emirate of Afghanistan: Taliban spokesman

0
12037
TTP has nothing to do with Islamic Emirate of Afghanistan: Taliban spokesman
TTP has nothing to do with Islamic Emirate of Afghanistan: Taliban spokesman

ٹی ٹی پی کا امارت اسلامیہ افغانستان سے کوئی تعلق نہیں: طالبان ترجمان

Taliban spokesman Zabihullah Mujahid has denied the TTP’s claim to affiliation with the Islamic Emirate of Afghanistan, saying “we have nothing to do with this organization.”

Zabihullah Mujahid, Deputy Minister of Information of the Islamic Emirate of Afghanistan, told Arab News in an interview that neither TTP has any connection with the Taliban government of Afghanistan nor our goals are the same.

Reiterating his commitment not to allow Afghan territory to be used against any other country, Zabihullah Mujahid said that TTP is an internal matter of Pakistan and we stand by our position of not interfering in the affairs of other countries.

Taliban spokesman Zabihullah Mujahid added, “We advise the TTP to focus on peace and stability in Pakistan.” The most important thing for them should be to prevent the enemies of the country from interfering in the region and Pakistan.

The Taliban spokesman also said that we request Pakistan to consider the demands of the TPP for the betterment of the region and Pakistan.

A video of Mufti Noor Wali Mehsud, head of the banned Tehreek-e-Taliban Pakistan (TTP), has gone viral on social media, in which he can be seen saying that the TTP is a part of the Islamic Emirate of Afghanistan.

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ٹی ٹی پی کے امارت اسلامیہ افغانستان کے ساتھ الحاق کے دعوے کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ “ہمارا اس تنظیم سے کوئی تعلق نہیں ہے۔”

امارت اسلامیہ افغانستان کے نائب وزیر اطلاعات ذبیح اللہ مجاہد نے عرب نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ٹی ٹی پی کا نہ تو افغانستان کی طالبان حکومت سے کوئی تعلق ہے اور نہ ہی ہمارے مقاصد ایک ہیں۔

افغان سرزمین کو کسی دوسرے ملک کے خلاف استعمال نہ ہونے دینے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ ٹی ٹی پی پاکستان کا اندرونی معاملہ ہے اور ہم دوسرے ممالک کے معاملات میں مداخلت نہ کرنے کے اپنے موقف پر قائم ہیں۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ ہم ٹی ٹی پی کو پاکستان میں امن و استحکام پر توجہ دینے کا مشورہ دیتے ہیں۔ ان کے لیے سب سے اہم کام ملک دشمنوں کو خطے اور پاکستان میں مداخلت سے روکنا ہے۔

طالبان ترجمان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ہم پاکستان سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ خطے اور پاکستان کی بہتری کے لیے ٹی پی پی کے مطالبات پر غور کرے۔

کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے سربراہ مفتی نور ولی محسود کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ہے جس میں انہیں یہ کہتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے کہ ٹی ٹی پی امارت اسلامیہ افغانستان کا حصہ ہے۔