Shehzad Akbar refuses to answer questions of Justice Qazi Faiz Issa

0
732
Shehzad Akbar refuses to answer questions of Justice Qazi Faiz Issa
Shehzad Akbar refuses to answer questions of Justice Qazi Faiz Issa

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے سوالات پر شہزاد اکبر کا جواب دینے سے انکار

Islamabad: Shehzad Akbar, while refusing to answer the questions of Justice Qazi Faiz Issa, said that Justice Qazi Faiz Issa is an accused and he cannot question me.

Special Assistant to the Prime Minister for Accountability Shehzad Akbar reached the Supreme Court to hear the case of Justice Qazi Faiz Issa. On this occasion, he said that Qazi Faiz Issa is the accused in this case, how can the accused question anyone else, the accused standing in the dock is not answered.

Shehzad Akbar said that Justice Qazi Faiz Issa has asked me questions, if the court asks me about his allegations, I will answer in court.

It is to be noted that Justice Faiz Issa has filed a miscellaneous petition in the case against the presidential reference in which he raised questions on the appointment of Shehzad Akbar and said that the appointment of Shehzad Akbar as Chairman Assets Recovery Unit is illegal. Who appointed the chairman? Was the chairman appointed by the Public Service Commission? Did Shahzad Akbar declare his assets and the citizenship of his family?

اسلام آباد: شہزاد اکبر نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے سوالات کے جوابات دینے سے انکار کردیا ، لیکن کہا جسٹس قاضی فائز عیسیٰ مدعا علیہ ہیں اور وہ مجھ سے سوال نہیں کرسکتے ہیں۔

احتساب کیلئے وزیر اعظم کے معاون خصوصی ، شہزاد اکبر جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس کی سماعت کے لئے سپریم کورٹ پہنچ گئے۔ اس موقع پر ، انہوں نے کہا کہ قاضی فائز عیسیٰ اس معاملے میں مشتبہ ہیں ، مدعا علیہ کسی اور سے یہ کیسے پوچھ سکتا ہے کہ کٹھرے میں کھڑے مدعا علیہ کا جواب نہیں دیا جاتا۔

شہزاد اکبر نے کہا جج قاضی فائز عیسیٰ نے مجھ سے سوالات پوچھے۔ اگر عدالت مجھ سے اس کے الزامات کے بارے میں پوچھے تو میں عدالت میں جواب دوں گا۔

واضح رہے کہ صدر کی سرزنش کے خلاف مقدمے میں ، جہاں انہوں نے شہزاد اکبر کی تقرری کے بارے میں سوالات پوچھے تھے ، جسٹس فیض عیسیٰ نے ایک مختلف درخواست دائر کی ہے اور شہزاد اکبر کی اثاثوں کی بازیابی یونٹ کے چیئرمین کے عہدے پر تقرری غیر قانونی ہے۔ چیئرمین کس نے مقرر کیا؟ کیا چیئرمین پبلک سروس کمیشن نے مقرر کیا ہے؟ کیا شہزاد اکبر نے اپنی دولت اور اپنے اہل خانہ کی شہریت کا اعلان کیا ہے؟