Senate Passes Special Education Bill for Illiterate Children

0
588
Senate Passes Special Education Bill for Illiterate Children
Senate Passes Special Education Bill for Illiterate Children

سینیٹ کا ناخواندہ بچوں کے لئے خصوصی تعلیم کا بل منظور

ناخواندہ بچوں کی تعلیم کے لئے خصوصی اقدامات کے لئے سینیٹ میں ایک بل منظور کیا گیا ہے۔

یہ بل پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا سے سینیٹر ثمینہ سعید نے سینیٹ میں پیش کیا اور متفقہ طور پر منظور کیا گیا۔

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی رہنما ثمینہ سعید کے ذریعہ پیش کردہ اس بل میں کہا گیا ہے کہ اسکول میں داخلے کے وقت ناخواندگی کا شکار بچوں کو اس بیماری کا ٹیسٹ لیا جائے اور اساتذہ کو ایسے بچوں کی تربیت دی جائے۔

سینیٹ میں پیش کردہ اس بل میں اسکولوں سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ اس بات کو یقینی بنائے کہ ایسے بچوں کو آسان اور واضح ہدایات دی جائیں اور حکومت اسکولوں میں ایک معالج مقرر کرے۔

بل میں مزید مطالبہ کیا گیا ہے کہ ناخواندگی کے شکار بچوں کے ساتھ امتیازی سلوک نہ کیا جائے اور ناخواندگی کے شکار بچوں کے لئے آگاہی پروگرام بنایا جائے۔

A bill has been passed in the Senate for special measures for the education of illiterate children.

The bill was introduced in the Senate by Senator Samina Saeed from Pakistan’s Khyber Pakhtunkhwa Province and passed unanimously.

The bill, introduced by Pakistan Tehreek-e-Insaf (PTI) leader Samina Saeed, calls for illiterate children to be tested for the disease at school and for teachers to be trained.

The bill, introduced in the Senate, calls on schools to ensure that such children are given simple and clear instructions and that the government appoint a physician in schools.

The bill further demands that illiterate children not be discriminated against and that an awareness program be created for illiterate children.