Rawalpindi A 16-year-old boy who was tortured for refusing to do bad deeds died during treatment

0
2776
Ahsan Ali
Ahsan Ali

راولپنڈی میں بد فعلی سے انکار کرنے پر تشدد کا نشانہ بننے والا ایک 16 سالہ لڑکا دوران علاج دم توڑ گیا

تھانہ کوٹلی ستیاں میں بد فعلی سے انکار کرنے پر تشدد کرنے والے 16 سالہ لڑکے کی علاج کے دوران موت ہوگئی۔

پولیس کے مطابق ، بد فعلی سے انکار کرنے پر راولپنڈی کے علاقے کوٹلی ستیاں میں 16 سالہ احسن علی کو منصور اور اُس کے ساتھیوں نے شدید پیٹا۔ اس کے بعد انہیں تشویشناک حالت میں راولپنڈی ڈسٹرکٹ اسپتال منتقل کردیا گیا۔ جہاں علاج کے دوران احسن علی کی موت ہوگئی۔

پولیس کے مطابق احسن علی کی لاش پوسٹ مارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کردی گئی ۔ ملزمان کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کیا گیا جس میں قتل کی دفعات بھی شامل کی جائیں گی

A 16-year-old boy who was tortured for refusing to do wrong in the Kotli Satyan police station died during treatment.

According to police, 16-year-old Ahsan Ali was severely beaten by the defendant Mansoor and others in the Koti Satyan area in Rawalpindi five days ago for refusing to commit misconduct. He was then transferred to the Rawalpindi District Hospital in critical condition. Where Ahsan Ali died during treatment.

According to the police, Ahsan Ali’s body is handed over to his heirs after death. An attempted murder was registered against the accused.