No power in the world can support Imran Khan’s performance: Maryam Nawaz

0
834
No power in the world can support Imran Khan's performance: Maryam Nawaz
No power in the world can support Imran Khan's performance: Maryam Nawaz

دنیا کی کوئی طاقت عمران خان کی کارکردگی کا ساتھ نہیں دے سکتی، مریم نواز

PML-N Vice President Maryam Nawaz has said that no power in the world can support Imran Khan’s performance.

The Islamabad High Court heard Maryam Nawaz’s appeal against the sentence in the Avonfield reference. NAB seeks adjournment of hearing on Maryam Nawaz’s appeal

A petition has been filed by the NAB prosecutor that I have a fever. The hearing on the appeals should be adjourned till any future date. The court granted the NAB’s request and adjourned the hearing till January 18.

Talking to media after her appearance, Maryam Nawaz said that there was a time when she was requesting for hearing on daily basis and today she is seeking adjournment.

Commenting on the defeat of PTI, Maryam Nawaz said that I congratulate Maulana Fazlur Rehman on his victory in Khyber Pakhtunkhwa. The result of Khyber Pakhtunkhwa local body elections is poor performance of PTI. PTI will suffer a humiliating defeat in every district of Lahore, Khanewal, Peshawar and Khyber Pakhtunkhwa. It is the first government to lose one election after another. ۔

Maryam Nawaz said that Imran Khan still has a chance, leave the lives of the people and resign, Imran Khan is going to have an even worse time. I have failed. The country is not running from me anymore. If there was even a little respectable person, he would have said goodbye and left.

How can the party win when the MNAs of PTI do not support it? No power in the world can support Imran Khan’s performance. He was overwhelmed by his own burden. Now there is no way for him to escape.

PML-N vice president said that Shahbaz Sharif is the party president but the decision of the prime ministerial candidate is with Nawaz Sharif. Nawaz Sharif is anxious to return home. We all want Nawaz Sharif to return home tomorrow. Pakistan is Nawaz Sharif’s own country. Will

Maryam Nawaz said that it is a great punishment for Pervez Musharraf that he is remembered as a dictator. Pervez Musharraf himself saw that Nawaz Sharif was elected Prime Minister for the third time even she also said that Nawaz Sharif has become history, Musharraf can’t come Pakistan today. Their name has been erased.

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ دنیا کی کوئی طاقت عمران خان کی کارکردگی کا ساتھ نہیں دے سکتی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا کے خلاف مریم نواز کی اپیل پر سماعت کی۔ نیب نے مریم نواز کی اپیل پر سماعت ملتوی کرنے کی درخواست کر دی۔

نیب پراسیکیوٹر کی جانب سے درخواست دائر کی گئی ہے کہ مجھے بخار ہے۔ اپیلوں پر سماعت آئندہ کسی تاریخ تک ملتوی کر دی جائے۔ عدالت نے نیب کی استدعا منظور کرتے ہوئے کیس کی سماعت 18 جنوری تک ملتوی کر دی۔

پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ ایک وقت تھا جب روزانہ کی بنیاد پر سماعت کی درخواست کرتی تھی اور آج التوا مانگ رہی ہیں۔

پی ٹی آئی کی شکست پر تبصرہ کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ میں مولانا فضل الرحمان کو خیبرپختونخوا میں جیت پر مبارکباد پیش کرتی ہوں۔ خیبرپختونخوا کے بلدیاتی انتخابات کا نتیجہ پی ٹی آئی کی ناقص کارکردگی ہے۔ پی ٹی آئی کو لاہور، خانیوال، پشاور اور خیبرپختونخوا کے ہر ضلع میں ذلت آمیز شکست کا سامنا کرنا پڑے گا۔ یہ ایک کے بعد ایک الیکشن ہارنے والی پہلی حکومت ہے۔ ۔

مریم نواز نے کہا کہ عمران خان کے پاس ابھی بھی موقع ہے، عوام کی جان چھوڑیں اور استعفیٰ دیں، عمران خان پر اس سے بھی برا وقت آنے والا ہے۔ میں ناکام ہو گیا ہوں۔ ملک اب مجھ سے نہیں چل رہا۔ ذرا سا بھی معزز آدمی ہوتا تو الوداع کہہ کر چلا جاتا۔

جب پی ٹی آئی کے ایم این ایز سپورٹ نہیں کریں گے تو پارٹی کیسے جیتے گی؟ دنیا کی کوئی طاقت عمران خان کی کارکردگی کا ساتھ نہیں دے سکتی۔ وہ اپنے ہی بوجھ سے دب گیا تھا۔ اب اس کے لیے فرار کا کوئی راستہ نہیں ہے۔

مسلم لیگ ن کے نائب صدر نے کہا کہ شہباز شریف پارٹی صدر ہیں لیکن وزارت عظمیٰ کے امیدوار کا فیصلہ نواز شریف کے پاس ہے۔ نواز شریف وطن واپسی کے لیے بے چین ہیں۔ ہم سب چاہتے ہیں کہ نواز شریف کل وطن واپس آئیں۔ پاکستان نواز شریف کا اپنا ملک ہے۔ مرضی

مریم نواز نے کہا کہ پرویز مشرف کے لیے یہ بڑی سزا ہے کہ انہیں ڈکٹیٹر کے طور پر یاد کیا جاتا ہے۔ پرویز مشرف نے خود دیکھا کہ نواز شریف تیسری بار وزیر اعظم منتخب ہوئے یہاں تک کہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ نواز شریف تاریخ بن چکے ہیں، مشرف آج پاکستان نہیں آ سکتے۔ ان کا نام و نشان مٹا دیا گیا ہے۔