Is There Tik Tok Next in The PTA List?

0
595
Video Sharing App
Video Sharing App

کیا پی ٹی اے کی فہرست میں ٹِک ٹاک اگلا ہے؟

پاکستانی ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹک ٹاک کو “آخری انتباہ” جاری کیا ہے۔ پی ٹی اے نے ٹِک ٹاک سے “اپنے سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے ذریعے بدکاری ، فحاشی، اور بے حیائی” پر قابو پانے کے لئے ایک جامع طریقہ کار وضع کرنے کو کہا۔

پی ٹی اے نے پہلے ہی بگو لائیو اسٹریمنگ ایپ پر پابندی عائد کردی ہے اور ایپ کے “غیر اخلاقی ، فحاشی اور بے ہودہ” مواد کے بارے میں لوگوں کی شکایات کو اٹھایا ہے۔ جولائی کے آغاز میں ، پی ٹی اے نے ملٹی پلیئر آن لائن گیم پب جی پر پابندی عائد کردی تھی۔

The Pakistan Telecommunications Authority has issued a “final warning” to the video-sharing app TikTok. The PTA called on Tik Tak to develop a comprehensive approach to tackling “immorality, pornography and obscenity through its social media platforms.”

The PTA has already banned the Bigo Live streaming app and raised public complaints about the app’s “immoral, obscene and nonsensical” content. In early July, the PTA banned the multiplayer online game PubG.