IHC issues contempt notice to Zartaj Gul, Amin Aslam in animal deaths case

0
531
IHC rejects PM Imran Khan's disqualification petition
IHC rejects PM Imran Khan's disqualification petition

آئی ایچ سی نے جانوروں سے ہونے والی اموات کیس میں زرتاج گل ، امین اسلم کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا

چڑیا گھر میں جانوروں کی ہلاکت سے متعلق کیس میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیر مملکت زرتاج گل اور معاون خصوصی ملک امین اسلم کو توہین عدالت کے نوٹس جاری کردیئے ہیں۔

چڑیا گھر میں جانوروں کی ہلاکت کے خلاف کیس کی سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کی۔

سکریٹری موسمیاتی تبدیلی ناہید درانی نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ وہ جانوروں کی موت کی تمام ذمہ داری قبول کرتے ہیں ، کابینہ کے ممبروں کا اس سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ کابینہ نے وائلڈ لائف بورڈ کو منظوری دے دی ہے ، لہذا وہ بھی اس کے ذمہ دار ہیں۔

عدالت نے موسمیاتی تبدیلی کے مشیر ملک امین اسلم ، موسمیاتی تبدیلی کے وزیر مملکت زرتاج گل اور وفاقی سکریٹری موسمیاتی تبدیلی ناہید درانی کو توہین عدالت کے نوٹس جاری کردیئے ہیں۔

اس کے علاوہ اسلام آباد وائلڈ لائف منیجمنٹ بورڈ کے ممبروں کو توہین عدالت کے شوکاز نوٹسز بھی جاری کردیئے گئے ہیں جس میں 27 اگست تک تمام فریقین سے جوابات طلب کیے گئے ہیں۔

The Islamabad High Court (IHC) has issued contempt of court notices to Minister of State Zartaj Gul and Special Assistant Malik Amin Aslam in a case related to the killing of animals in a zoo.

The case against the killing of animals in the zoo was heard by the Chief Justice of the Islamabad High Court, Athar Minallah.

Secretary Climate Change Naheed Durrani has taken the position that he accepts all responsibility for the death of animals, cabinet members have nothing to do with it.

Chief Justice Athar Minallah remarked that the Cabinet has approved the Wildlife Board, so he is also responsible for it.

The court has issued contempt notices to Climate Change Advisor Malik Amin Aslam, Minister of State for Climate Change Zartaj Gul and Federal Secretary Climate Change Naheed Durrani.

Besides, show cause notices of contempt of court have also been issued to the members of Islamabad Wildlife Management Board in which replies have been sought from all parties till August 27.