Government decides to legislate to curb alleged horse trading in Senate elections

0
575
Government decides to legislate to curb alleged horse trading in Senate elections
Government decides to legislate to curb alleged horse trading in Senate elections

حکومت کا سینیٹ انتخابات میں مبینہ ہارس ٹریڈنگ روکنے کے لیے قانون سازی کا فیصلہ

Minister for Parliamentary Affairs Babar Awan has said that the government has decided to enact important legislation against alleged horse trading in the Senate elections.

Talking to media in Islamabad, he said that an important meeting of the federal cabinet would be held tomorrow to curb the alleged horse trading in the Senate elections.

Babar Awan said that the Ministry of Parliamentary Affairs would give a briefing in the Senate on legislation on buying and selling of votes.

He said that the President had sought the opinion of the Supreme Court through reference, the Supreme Court gave its opinion on it and issued an order that the vote could be declared.

Babar Awan said that if there was any suspicion of selling votes, it could be seen whether the party which got the vote got it or not.

Minister for Parliamentary Affairs Babar Awan said that the Ministry of Parliamentary Affairs and the Election Commission are in touch and they are going to legislate in consultation with the Election Commission.

The war of words between the government and the opposition over the introduction of electronic voting machines (EVMs) in the Senate in September this year continued. Called rigging machines.

Minister of State for Parliamentary Affairs Ali Muhammad Khan slammed the opposition over the issue of electronic voting machines and open ballots in the Senate elections.

وزیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے کہا ہے کہ حکومت نے سینیٹ انتخابات میں مبینہ ہارس ٹریڈنگ کے خلاف اہم قانون سازی کا فیصلہ کیا ہے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سینیٹ انتخابات میں مبینہ ہارس ٹریڈنگ کی روک تھام کے لیے وفاقی کابینہ کا اہم اجلاس کل ہوگا۔

بابر اعوان نے کہا کہ وزارت پارلیمانی امور ووٹ کی خرید و فروخت سے متعلق قانون سازی پر سینیٹ میں بریفنگ دے گی۔

انہوں نے کہا کہ صدر نے ریفرنس کے ذریعے سپریم کورٹ سے رائے مانگی تھی، سپریم کورٹ نے اس پر اپنی رائے دی اور حکم جاری کیا کہ ووٹ ڈکلیئر کیا جائے۔

بابر اعوان نے کہا کہ ووٹ بیچنے کا کوئی شبہ ہے تو دیکھا جائے جس پارٹی کو ووٹ ملے اس کو ملے یا نہیں۔

وزیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے کہا کہ وزارت پارلیمانی امور اور الیکشن کمیشن رابطے میں ہیں اور وہ الیکشن کمیشن کی مشاورت سے قانون سازی کرنے جارہے ہیں۔

اس سال ستمبر میں سینیٹ میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) متعارف کرانے پر حکومت اور اپوزیشن کے درمیان لفظی جنگ جاری رہی۔ دھاندلی کی مشینیں کہلاتی ہیں۔

وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے سینیٹ انتخابات میں الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں اور اوپن بیلٹ کے معاملے پر اپوزیشن کو آڑے ہاتھوں لیا۔