Explosion near Iranian nuclear plant during defense test

0
966
Explosion near Iranian nuclear plant during defense test
Explosion near Iranian nuclear plant during defense test

دفاعی ٹیسٹ کے دوران ایرانی جوہری پلانٹ کے قریب دھماکہ

An air defense test caused an explosion near Iran’s Natanz nuclear plant.

The AFP report quoted Iran’s state news agency as saying the blast was heard in the sky 20 kilometers from the nuclear plant.

An eyewitness said that the residents of Badrud heard a noise and saw a glow in which something was seen exploding in the sky above the city.

However, Iranian military spokesman General Amir Trikhani told state TV that there was no danger. “The missile system was tested an hour ago to test our capability on the ground and there is no danger,” he explained.

The situation comes at a time when Iran’s negotiations with world powers are in doubt.

Israel has repeatedly stated that it will use all possible means, including the use of force, to prevent Iran from acquiring nuclear weapons. Iran also conducts exercises from time to time to improve the security of its nuclear facilities.

According to an Iranian military spokesman, the exercises are being conducted in a secure and coordinated defense network to test systems in the region.

ایران کے نتنز جوہری پلانٹ کے قریب فضائی دفاعی تجربے کے نتیجے میں دھماکہ ہوا۔

اے ایف پی کی رپورٹ میں ایران کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ دھماکے کی آواز ایٹمی پلانٹ سے 20 کلومیٹر دور آسمان میں سنی گئی۔

ایک عینی شاہد نے بتایا کہ بدرود کے رہائشیوں نے شور سنا اور ایک چمک دیکھی جس میں شہر کے اوپر آسمان پر کوئی چیز پھٹتی ہوئی دیکھی گئی۔

تاہم ایرانی فوج کے ترجمان جنرل امیر ترخانی نے سرکاری ٹی وی کو بتایا کہ کوئی خطرہ نہیں ہے۔ انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ زمین پر ہماری صلاحیت کو جانچنے کے لیے ایک گھنٹہ پہلے میزائل سسٹم کا تجربہ کیا گیا تھا اور اس میں کوئی خطرہ نہیں ہے۔

یہ صورتحال ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب ایران کے عالمی طاقتوں کے ساتھ مذاکرات شکوک و شبہات کا شکار ہیں۔

اسرائیل نے بارہا کہا ہے کہ وہ ایران کو جوہری ہتھیاروں کے حصول سے روکنے کے لیے طاقت کے استعمال سمیت تمام ممکنہ ذرائع استعمال کرے گا۔ ایران اپنی جوہری تنصیبات کی حفاظت کو بہتر بنانے کے لیے وقتاً فوقتاً مشقیں بھی کرتا رہتا ہے۔

ایرانی فوجی ترجمان کے مطابق یہ مشقیں ایک محفوظ اور مربوط دفاعی نیٹ ورک میں کی جا رہی ہیں تاکہ خطے میں نظام کی جانچ کی جا سکے۔