EVM law challenged in Islamabad High Court

0
630
Committee formed to remove ECP's reservations on EVM
Committee formed to remove ECP's reservations on EVM

ای وی ایم سے متعلق قانون اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج

New legislation on electronic voting machines (EVMs) was challenged in the Islamabad High Court on Tuesday.

Chief Justice Islamabad High Court Athar Minallah, while declaring the petition of the citizen incomplete, inquired as to which provisions of the Electronic Voting Machine Act the petitioner objected to?

The petitioner replied that the electronic voting machine is a fraud scheme, the legislation should be declared null and void.

“Are the provisions of the electronic voting machine legislation unconstitutional?” The Chief Justice asked.

The Honorable Judge remarked angrily that such incomplete petitions should face punishment.

Petitioner Fidaullah requested the court to grant respite to the petition.

Islamabad High Court granted respite on citizen’s request.

الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) سے متعلق نئی قانون سازی کو منگل کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ہے۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ اطہر من اللہ نے شہری کی درخواست کو نامکمل قرار دیتے ہوئے استفسار کیا کہ الیکٹرونک ووٹنگ مشین قانون کی کن شقوں پر درخواست گزار نے اعتراض کیا؟

درخواست گزار نے جواب دیا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین فراڈ سکیم ہے، قانون سازی کو کالعدم قرار دیا جائے۔

“الیکٹرانک ووٹنگ مشین کی قانون سازی کی دفعات غیر آئینی ہیں؟” چیف جسٹس نے سوال کیا۔

معزز جج نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیے کہ ایسی نامکمل درخواستوں کو سزا کا سامنا کرنا چاہیے۔

درخواست گزار فدا اللہ نے عدالت سے استدعا کی کہ درخواست کے درست ہونے کے لیے مہلت دی جائے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے شہری کی درخواست پر مہلت دے دی۔