Committee set up to Investigate Petrol Shortage across the Country

0
490
Committee set up to Investigate Petrol Shortage across the Country
Committee set up to Investigate Petrol Shortage across the Country

ملک بھر میں پٹرول کی قلت کی تحقیقات کے لئے کمیٹی تشکیل

ملک میں پٹرول کی قلت کے حوالے سے وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب کی زیرصدارت پٹرولیم ڈویژن میں ایک اعلی سطح کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وفاقی وزیر توانائی نے ملک میں جاری پٹرول بحران پر گہری تشویش کا اظہار کیا اور ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کی ہدایت کی۔

وفاقی وزیر توانائی نے کہا کہ ملک میں 214،536 میٹرک ٹن قابل استعمال پٹرول ہے جو اگلے دس دن تک ملک کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے کافی ہے۔ انہوں نے آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو مالاکنڈ ، فیصل آباد اور حیدرآباد ڈویژنوں میں اضافی پیٹرول مہیا کرنے کی بھی ہدایت کی۔

اجلاس میں پیٹرول کی قلت کے اسباب اور ان کے ذمہ داروں کے تعین کے لئے ڈی جی آئل کی سربراہی میں ایک کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔ کمیٹی آئل مارکیٹنگ کمپنیوں اور پٹرول خوردہ فروشوں کے ڈپووں کا معائنہ کرے گی۔ اس کمیٹی کی سفارشات پر ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کی جائے۔

A high level meeting was held in the Petroleum Division under the chairmanship of Federal Minister for Energy Omar Ayub regarding the shortage of petrol in the country. In the meeting, the Federal Minister for Energy expressed deep concern over the ongoing petrol crisis in the country and directed strict action against those responsible.

The Federal Minister for Energy said that the country has 214,536 metric tonnes of usable petrol which is sufficient to meet the needs of the country for the next ten days. He also directed the oil marketing companies to provide additional petrol in Malakand, Faisalabad and Hyderabad divisions.

The meeting decided to form a committee headed by DG Oil to determine the causes of petrol shortage and those responsible. The committee will inspect the depots of oil marketing companies and petrol retailers. Action should be taken against those responsible on the recommendations of this committee.