Announcement Of Closure Of Different Areas Of Lahore For 2 Weeks From Tomorrow

0
604
Closure Of Different Areas Of Lahore
Closure Of Different Areas Of Lahore

کل سے 2 ہفتوں کے لئے لاہور کے مختلف علاقوں کو بند رکھنے کا اعلان

لاہور: پنجاب حکومت نے دو ہفتوں کے لئے لاہور کے مختلف علاقوں کو بند رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کل آدھی رات کے بعد کم از کم دو ہفتوں کے لئے اور پھر صورتحال پر غور کرتے ہوئے لاہور کے بہت سے علاقے بند کردیئے جائیں گے۔ علاقوں کو کھولنے کا فیصلہ کریں ، لیکن ان علاقوں میں کھانا اور دواخانہ کھلا رہے گا۔

یاسمین راشد نے بتایا کہ شاہدرہ ، شادباغ ، ہاربورنسپورہ ، گلبرگ کے کچھ علاقوں ، نشتر ٹاؤن ، علامہ اقبال ٹاون میں بھی کچھ سوسائٹیاں بند رہیں گی۔ کرونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے لوگوں کو سختی سے ایس او پیز پر عمل کرنا چاہئے ، صرف ماسک کے استعمال سے وبا پھیلنے کو 50٪ تک روکا جاسکتا ہے۔ صوبائی وزیر صحت نے کہا کہ ہم ان علاقوں پر پابندیاں عائد کررہے ہیں جہاں کورونا کے کیسز زیادہ ہیں۔ مریضوں کے اہل خانہ گھر بیٹھ کر وینٹیلیٹر کا مطالبہ کرتے ہیں۔ افسوس نہیں جب نیوزی لینڈ جیسے ملک کے مقابلے میں کورونا کے ہر مریض کو وینٹیلیٹر کی ضرورت ہوتی ہے۔

صوبائی وزیر صحت کا کہنا ہے کہ – ان علاقوں میں خوراک اور دواخانہ کھلا رہے گا۔


LAHORE: The Punjab government has announced closure of various areas of Lahore for two weeks. Addressing a press conference in Lahore, Provincial Health Minister Dr Yasmeen Rashid said that many areas of Lahore would be closed after midnight tomorrow, at least for two weeks and then considering the situation. Decide to open areas, but food and pharmacy will remain open in these areas.


Yasmeen Rashid said that some societies in Shahdara, Shadbagh, Harburnspura, some areas of Gulberg, Nishtar Town, Allama Iqbal Town will also be closed. People should strictly follow the SOPs to prevent the spread of corona, the use of masks alone can prevent the spread of the epidemic by up to 50%. The provincial health minister said that we are imposing restrictions on the areas where the cases of corona are high. The families of the patients sit at home and demand a ventilator. Not every Corona patient needs a ventilator, sadly when compared to a country like New Zealand.


Food and pharmacy will remain open in these areas, says provincial health minister.