Air quality index reached dangerous levels in Lahore

0
666
Air quality index reached dangerous levels in Lahore
Air quality index reached dangerous levels in Lahore

لاہور میں ایئر کوالٹی انڈیکس خطرناک سطح پر پہنچ گیا

Lahore is still number one in the list of the most polluted cities in the world due to which the air quality index has reached dangerous levels.

According to the Air Quality Index released by the Department of Environmental Protection, the Air Quality Index is reaching dangerous levels in different parts of Lahore. In Lahore, even today, air pollution and smog are likely to spread colds, flu, coughs and other infections.

According to statistics, Lahore tops the list of most polluted cities, followed by Indian city Delhi and Chinese city Wuhan. Thokar Niaz Baig 394, DHA Phase 8 447, Thokar Niaz Baig 440, Gulberg recorded 652 air quality index, besides Gujranwala 413, Bahawalpur 392, Sahiwal 340 and Raiwind the highest among the cities of Punjab after Lahore. I recorded 296 air quality index.

لاہور اب بھی دنیا کے آلودہ ترین شہروں کی فہرست میں پہلے نمبر پر ہے جس کی وجہ سے ہوا کے معیار کا انڈیکس خطرناک حد تک پہنچ گیا ہے۔

محکمہ تحفظ ماحولیات کی جانب سے جاری کردہ ایئر کوالٹی انڈیکس کے مطابق لاہور کے مختلف علاقوں میں ایئر کوالٹی انڈیکس خطرناک سطح پر پہنچ رہا ہے۔ لاہور میں آج بھی فضائی آلودگی اور سموگ کے باعث نزلہ، فلو، کھانسی اور دیگر انفیکشن پھیلنے کا خدشہ ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق آلودہ ترین شہروں کی فہرست میں لاہور سرفہرست ہے، اس کے بعد بھارتی شہر دہلی اور چینی شہر ووہان ہیں۔ لاہور کے بعد پنجاب کے شہروں میں ٹھوکر نیاز بیگ 394، ڈی ایچ اے فیز 8 447، ٹھوکر نیاز بیگ 440، گلبرگ میں 652 ایئر کوالٹی انڈیکس ریکارڈ کیا گیا، اس کے علاوہ گوجرانوالہ 413، بہاولپور 392، ساہیوال 340 اور رائے ونڈ سب سے زیادہ رہا۔ میں نے 296 ایئر کوالٹی انڈیکس ریکارڈ کیا۔