3 more Kashmiri Youths Martyred in Indian Army State Terrorism

0
665
3 more Kashmiri Youths Martyred in Indian Army State Terrorism
3 more Kashmiri Youths Martyred in Indian Army State Terrorism

بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی میں مزید 3 کشمیری نوجوان شہید

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے ضلع اسلام آباد میں بھارتی فوج اور پولیس نے داخلی راستوں کو بند کر کے سرچ آپریشن کیا ، اس دوران گھر گھر تلاشی لی گئی۔ خواتین ، بچوں اور بوڑھوں کو ہراساں کیا گیا۔

قابض بھارتی فوج نے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران تین نہتے کشمیری نوجوانوں کو گولی مار کر ہلاک کردیا۔ جارح بھارتی فوج نے نوجوانوں کی لاشوں کو ان کے اہل خانہ کے حوالے کرنے سے انکار کردیا ، جس سے اہل خانہ اور علاقے کے رہائشیوں نے شدید احتجاج کیا۔

بھارت نواز کٹھ پتلی انتظامیہ نے روایتی ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرکے شہید نوجوانوں کو دہشت گرد ثابت کرنے کی کوشش کی لیکن اہل خانہ اور اہل علاقہ نے اس جھوٹ کو بے نقاب کردیا۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں رواں ماہ ہندوستانی فوج کی فائرنگ سے شہید ہونے والوں کی تعداد 25 ہوگئی ہے ، جبکہ متعدد علاقوں میں کرفیو ابھی بھی نافذ ہے اور انٹرنیٹ سروس سمیت بنیادی انسانی حقوق معطل ہیں۔

According to Kashmir Media Service, Indian Army and police conducted a search operation in Islamabad district of Occupied Kashmir by closing the entrances, during which house to house searches were conducted. Women, children and the elderly were harassed.

Occupying Indian Army shot dead three unarmed Kashmiri youths during a so-called search operation. The invading Indian army refused to hand over the bodies of the youths to their families, prompting strong protests from the families and residents of the area.

The pro-India puppet administration tried to prove the martyred youth as terrorists by showing traditional stubbornness but the family and the people of the area exposed this lie.

It should be noted that the number of martyrs killed in Indian Army firing in occupied Kashmir this month has risen to 25, while curfew is still in force in several areas and basic human rights, including internet service, are suspended.