Home Pakistan US To Talks with Taliban after withdrawal

US To Talks with Taliban after withdrawal

انخلا کے بعد امریکہ طالبان سے مذاکرات کرے گا

Taliban and US officials say senior Taliban officials and US envoys will hold talks on Saturday and Sunday to curb extremist groups in Afghanistan and facilitate the evacuation of foreign nationals and Afghans.

This is the first meeting since the withdrawal of US troops from Afghanistan in late August, which ended a 20-year military presence there and increased the power of the Taliban in the country.

The talks will take place in Doha, the capital of the Persian Gulf state of Qatar.

Doha-based Taliban spokesman Sohail Shaheen told the AP that the talks would also review the Taliban’s peace deal with Washington in 2020.

The agreement paved the way for the final withdrawal of the United States.

Sohail Shaheen said: “Yes, a meeting on bilateral relations and the implementation of the Doha Agreement has been scheduled. It will cover various topics.”

Another official, who spoke on condition of anonymity, said “terrorism will also be discussed in the talks.”

Since the Taliban took power, the militant group ISIS has targeted both the Taliban and ethnic and religious minorities.

On Friday, an ISIS suicide bomber killed at least 55 worshipers at a Shiite mosque and wounded dozens more in the deadliest attack since the US withdrawal.

ISIS has carried out a series of attacks against the country’s Shiites since its emergence in eastern Afghanistan in 2014.

ISIS is also considered the biggest threat to the United States.

The 2020 agreement between the United States and the Taliban, negotiated by the Trump administration, called on the Taliban to sever ties with terrorist groups and ensure that Afghanistan will no longer host terrorists other than the United States and attack its allies.

It appears that the two sides will also discuss the growing threat in talks over the weekend.

The Taliban have said they do not want US help against terrorism and have warned Washington against any attack on Afghan soil outside the country’s borders.

طالبان اور امریکی حکام کا کہنا ہے کہ افغانستان میں شدت پسند گروہوں کو روکنے اور غیر ملکی شہریوں اور افغانیوں کے انخلا کی سہولت کے لیے طالبان کے سینئر عہدیدار اور امریکی ایلچی ہفتے اور اتوار کو مذاکرات کریں گے۔

اگست کے آخر میں افغانستان سے امریکی فوجیوں کے انخلاء کے بعد یہ پہلی ملاقات ہے جس نے وہاں 20 سالہ فوجی موجودگی ختم کی اور ملک میں طالبان کی طاقت میں اضافہ کیا۔

یہ مذاکرات خلیج فارس کی ریاست قطر کے دارالحکومت دوحہ میں ہوں گے۔

دوحہ میں مقیم طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے اے پی کو بتایا کہ مذاکرات 2020 میں واشنگٹن کے ساتھ طالبان کے امن معاہدے کا بھی جائزہ لیں گے۔

معاہدے نے امریکہ سے حتمی انخلا کی راہ ہموار کر دی۔

سہیل شاہین نے کہا: “ہاں ، دوطرفہ تعلقات اور دوحہ معاہدے پر عمل درآمد کے حوالے سے ایک میٹنگ شیڈول کی گئی ہے۔ اس میں مختلف موضوعات کا احاطہ کیا جائے گا۔”

ایک اور عہدیدار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا کہ مذاکرات میں دہشت گردی پر بھی بات کی جائے گی۔

جب سے طالبان نے اقتدار سنبھالا ہے ، شدت پسند گروپ داعش نے طالبان اور نسلی اور مذہبی اقلیتوں دونوں کو نشانہ بنایا ہے۔

جمعہ کے روز ، داعش کے ایک خودکش بمبار نے ایک شیعہ مسجد میں کم از کم 55 نمازیوں کو ہلاک کر دیا تھا اور امریکی انخلا کے بعد کے مہلک ترین حملے میں درجنوں افراد زخمی ہوئے تھے۔

داعش نے 2014 میں مشرقی افغانستان میں اپنے ظہور کے بعد سے ملک کے شیعوں کے خلاف کئی حملے کیے ہیں۔

داعش کو امریکہ کے لیے سب سے بڑا خطرہ بھی سمجھا جاتا ہے۔

امریکہ اور طالبان کے درمیان 2020 کا معاہدہ جس میں ٹرمپ انتظامیہ نے مذاکرات کیے ، طالبان سے مطالبہ کیا کہ وہ دہشت گرد گروہوں سے تعلقات ختم کریں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ افغانستان اب امریکہ کے علاوہ کسی اور دہشت گرد کی میزبانی نہیں کرے گا اور اس کے اتحادیوں پر حملہ کرے گا۔

ایسا لگتا ہے کہ دونوں فریق ہفتے کے آخر میں بات چیت میں بڑھتے ہوئے خطرے پر بھی تبادلہ خیال کریں گے۔

طالبان نے کہا ہے کہ وہ دہشت گردی کے خلاف امریکی مدد نہیں چاہتے اور واشنگٹن کو ملک کی سرحدوں سے باہر افغان سرزمین پر کسی بھی حملے کے خلاف خبردار کیا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

FATF decides to keep Pakistan on gray list

ایف اے ٹی ایف کا پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کا فیصلہ The Financial Action Task Force...

Sri Lanka Reached Super 12 defeating Ireland in T20 World Cup

سری لنکا نے ٹی 20 ورلڈ کپ میں آئرلینڈ کو شکست دے کر سپر 12 تک رسائی حاصل کرلی

Senate committee summoned the Finance Adviser and the Governor SBP on inflation

سینیٹ کمیٹی نے مہنگائی پر مشیر خزانہ اور گورنر اسٹیٹ بینک کو طلب کر لیا Taking note of...

Rupee hits new low against US dollar

امریکی ڈالر کے مقابلے میں روپیہ تاریخ کی نئی گراوٹ ریکارڈ The Pakistani rupee hit a new record...

Recent Comments