Companies Ordinance 2020 Announcement by President Arif Alvi

0
571
Companies Ordinance 2020
Companies Ordinance 2020

President Dr. Arif Alvi enacted the corporate regulation (amendment) 2020 to facilitate investors and start-ups in the country. Under the new regulation, the conditions for filing subscription money within 30 days and filing the statutory auditor’s certificate have been removed to make work easier for small businesses.

The powers of the Commission have been expanded by the new company regulation (amendment) 2020, and now a registered company can hold an extraordinary general meeting with the approval of the commission. The valuation mechanism of the limited liability company was changed in the new company regulation (amendment) 2020.

These changes have been proposed by the Securities and Exchange Commission of Pakistan (SECP) to promote startups and attract local and international innovators.

صدر عارف علوی نے کمپنیوں کا آرڈیننس 2020 کا اعلان کر دیا

صدر ڈاکٹر عارف علوی نے ملک میں سرمایہ کاروں اور اسٹارٹ اپس کی سہولت کے لئے کارپوریٹ ریگولیشن (ترمیمی) 2020 نافذ کیا۔ نئے ضابطے کے تحت ، چھوٹے کاروباروں کو کام آسان بنانے کے لیے 30 دن کے اندر اندر خریداری کی رقم جمع کروانے اور قانونی آڈیٹر کا سرٹیفکیٹ فائل کرنے کی شرائط کو ختم کردیا گیا ہے۔

نئی کمپنی ریگولیشن (ترمیمی) 2020 کے ذریعہ کمیشن کے اختیارات میں توسیع کردی گئی ہے ، اور اب ایک رجسٹرڈ کمپنی کمیشن کی منظوری سے غیر معمولی جنرل میٹنگ کر سکتی ہے۔ نئی کمپنی ریگولیشن (ترمیم) 2020 میں محدود ذمہ داری کمپنی کے اندازہ لگانے کے طریقہ کار کو تبدیل کردیا گیا۔

یہ تبدیلیاں سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) کی طرف سے تجویز کی گئی ہیں کہ وہ اسٹارٹ اپ کو فروغ دیں اور مقامی اور بین الاقوامی اختراعات کو راغب کریں۔