Home World UN should take steps to eradicate Indian colonies on Kashmir: Pakistan

UN should take steps to eradicate Indian colonies on Kashmir: Pakistan

اقوام متحدہ کشمیر پر بھارتی نوآبادیات کے خاتمے کے لیے اقدامات کرے: پاکستان

Pakistan has called on the UN Decolonization Committee and the Security Council to take steps to end the Indian colonization of Jammu and Kashmir and allow the people of occupied Kashmir to exercise their right to self-determination.

According to the official APP news agency, the Pakistani ambassador to the United Nations, Munir Akram, in his speech before the Special Political and Decolonization Commission (Fourth) of the General Assembly stressed that the end of colonialism is part of the incomplete agenda. of the United Nations.

After his speech, delegates from India and Pakistan exchanged bitter words about the Occupied Kashmir dispute.

Ambassador Munir Akram said that the Indian occupation of Jammu and Kashmir was the worst manifestation of modern colonialism.

He said that 80 former colonies have gained independence since 1946, but still the people of Jammu and Kashmir and Palestine are among those who are deprived of the right to self-determination.

He said that all people have the right to self-determination, while in the case of Jammu and Kashmir this right is clear through the UN Security Council resolutions that the future state of the region must be decided.

He said that Kashmir is today the most densely occupied place in the world, 900,000 Indian soldiers are stationed in the disputed area, the entire Kashmiri leadership has been imprisoned, thousands of Kashmiri youth, including women and children, have been detained. Palaces and villages were destroyed as a “collective punishment”.

Ambassador Munir Akram said that India had shut down the Internet and did not allow independent observers to enter occupied Kashmir.

He recalled that the body of the famous Kashmiri leader Syed Ali Shah Gilani had been taken from his family and that his family had been deprived of the right to Islamic burial.

The Pakistani ambassador said that this was not only a measure of Indian oppression, but also the fear of a free voice from the Kashmiri people.

He said that since the illegal attempt to integrate Jammu and Kashmir, India’s aim was to change the population of the region by providing false address certificates.

Munir Akram stressed that this amounted to genocide and called on the Security Council to take measures so that the people of Kashmir could exercise their right to self-determination.

پاکستان نے اقوام متحدہ کی ڈیکالونائزیشن کمیٹی اور سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ جموں و کشمیر میں بھارتی نوآبادیات کے خاتمے کے لیے اقدامات کرے اور مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کو حق خود ارادیت استعمال کرنے کی اجازت دے۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی اے پی پی کے مطابق ، اقوام متحدہ میں پاکستانی سفیر ، منیر اکرم نے جنرل اسمبلی کے خصوصی پولیٹیکل اینڈ ڈیکولائزیشن کمیشن (چوتھے) کے سامنے اپنی تقریر میں اس بات پر زور دیا کہ استعمار کا خاتمہ نامکمل ایجنڈے کا حصہ ہے۔ اقوام متحدہ کے

ان کی تقریر کے بعد ، بھارت اور پاکستان کے مندوبین نے مقبوضہ کشمیر کے تنازعہ کے بارے میں تلخ کلامی کا تبادلہ کیا۔

سفیر منیر اکرم نے کہا کہ جموں و کشمیر پر بھارتی قبضہ جدید نوآبادیات کا بدترین مظہر ہے۔

انہوں نے کہا کہ 1946 سے اب تک 80 سابقہ ​​کالونیوں نے آزادی حاصل کی ہے ، لیکن پھر بھی جموں و کشمیر اور فلسطین کے لوگ ان لوگوں میں شامل ہیں جو حق خود ارادیت سے محروم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تمام لوگوں کو حق خود ارادیت حاصل ہے ، جبکہ جموں و کشمیر کے معاملے میں یہ حق اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے ذریعے واضح ہے کہ خطے کی مستقبل کی ریاست کا فیصلہ ہونا ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر آج دنیا کا سب سے گنجان مقبوضہ مقام ہے ، 900،000 بھارتی فوجی متنازعہ علاقے میں تعینات ہیں ، پوری کشمیری قیادت کو قید کر دیا گیا ہے ، خواتین اور بچوں سمیت ہزاروں کشمیری نوجوانوں کو حراست میں لیا گیا ہے۔ محلات اور دیہات کو “اجتماعی سزا” کے طور پر تباہ کر دیا گیا۔

سفیر منیر اکرم نے کہا کہ بھارت نے انٹرنیٹ بند کر دیا ہے اور آزاد مبصرین کو مقبوضہ کشمیر میں داخل نہیں ہونے دیا۔

انہوں نے یاد دلایا کہ مشہور کشمیری رہنما سید علی شاہ گیلانی کی میت ان کے خاندان سے لی گئی تھی اور ان کا خاندان اسلامی تدفین کے حق سے محروم تھا۔

پاکستانی سفیر نے کہا کہ یہ نہ صرف بھارتی جبر کا ایک پیمانہ تھا بلکہ کشمیری عوام کی ایک آزاد آواز کا خوف بھی تھا۔

انہوں نے کہا کہ چونکہ جموں و کشمیر کو ضم کرنے کی غیر قانونی کوشش ہے ، بھارت کا مقصد خطے کی آبادی کو غلط ایڈریس سرٹیفکیٹ دے کر تبدیل کرنا تھا۔

منیر اکرم نے زور دیا کہ یہ نسل کشی کے مترادف ہے اور سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا کہ وہ ایسے اقدامات کرے تاکہ کشمیری عوام اپنے حق خود ارادیت کا استعمال کر سکیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Alia Bhatt made her fan cry

عالیہ بھٹ نے اپنے مداح کو رلا دیا Bollywood star Alia Bhatt recognized her fan even after 7...

Most watched match of Pak-India World Cup T20

پاک بھارت ورلڈ کپ ٹی20 کا سب سے زیادہ دیکھا جانے والا میچ The International Cricket Council (ICC)...

Taliban-U.S talks will resume in in Doha, Qatar

قطر کے دارالحکومت دوحہ میں طالبان امریکہ مذاکرات دوبارہ شروع ہوں گے Zabihullah Mujahid, a spokesman for the...

Dollar reached a record high of Rs 179

ڈالر 179 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا The dollar continued to soar, reaching a high...

Recent Comments