Home Pakistan Pakistan Refutes Indian Propaganda in Gilgit-Baltistan

Pakistan Refutes Indian Propaganda in Gilgit-Baltistan

The Pakistani Ministry of Foreign Affairs has summoned a senior Indian diplomat last day and has announced that Pakistan has rejected India’s unfounded and deceptive dispute with Pakistan’s Supreme Court ruling on a Gilgit Baltistan (GB) issue. It was made clear that the Indian claim to the occupied state of Jammu and Kashmir as “an integral part” of India has no legal basis, the FO spokesman said in a statement The statement also says: “The entire state of Jammu and Kashmir is a” controversial “area and is recognized as such by the international community. The dispute is the longest open item on the agenda of the United Nations Security Council. , came from India’s violent and illegal occupation of the state of Jammu and Kashmir in 1947, in complete violation of international law and the aspirations of the people of Jammu and Kashmir. “No subsequent illegal and unilateral Indian actions could or could have changed the status of Jammu and Kashmir as a controversial area.”

FO spokesman said The FO statement underlined that the only solution to the Jammu-Kashmir dispute was the faithful implementation of the relevant United Nations Security Council resolutions, in which the Kashmiris’ inalienable right to self-determination through the democratic method of free and impartial referendum United Nations Patronage Recognized In the dispute, all unilateral Indian actions in IOJ & K were illegal.

It has been reiterated that India’s unilateral actions on August 5, 2019, and subsequent attempts to change the demographic structure of Jammu and Kashmir in violation of the Fourth Geneva Convention, were illegal and clearly violated United Nations Security Council resolutions. The statement also emphasized that the unfounded Indian clash with Gilgit-Baltistan could not cover up the atrocities committed by the Indian occupation forces against innocently unarmed Kashmiris in the IOC, nor could it distract the international community’s attention from the IOJ&K.

The Indian government was asked to immediately reverse all illegal actions in IOJ & K, including ending the illegal occupation of the territory, and to exercise the right of self-determination enshrined in United Nations Security Council resolutions under the United Nations Security Council resolutions. To reaffirm the continued severe human rights violations by Indian occupying forces in IOJ & K in Pakistan, India has been asked to lift restrictions and communications outages, release illegally detained Kashmiri youth and detained Kashmiri leadership, and to withdraw draconian laws such as the Armed Forces Special Powers Act (AFSPA ) and Public Safety Act (PSA) in IOJ & K, declaration completed.

The Gilgit-Baltistan provincial government has also refuted Indian propaganda about the GB, Shams Mir, the GB’s information minister, said in a statement that Gilgit-Baltistan is an integral part of Pakistan and that nationals loved their country. Shams Mir went on to say that “India cannot divert the attention of the United Nations (UN) from the occupied Jammu and Kashmir or suppress the struggle for Kashmiri’s independence.”

پاکستان نے گلگت بلتستان میں بھارتی پروپیگنڈے کو مسترد کر دیا

پاکستانی وزارت خارجہ نے گذشتہ روز ایک سینئر ہندوستانی سفارت کار کو طلب کیا اور اعلان کیا ہے کہ پاکستان نے گلگت بلتستان (جی بی) کے معاملے پر پاکستان کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے ساتھ بھارت کے بے بنیاد اور فریب دہ تنازعہ کو مسترد کردیا ہے۔ یہ واضح کردیا گیا کہ مقبوضہ ریاست جموں و کشمیر کے ہندوستان کے “اٹوٹ انگ” ہونے کے دعوے کی کوئی قانونی بنیاد نہیں ہے ، ایف او کے ترجمان نے ایک بیان میں یہ بھی کہا ہے: “پوری ریاست جموں وکشمیر ہے۔ یہ تنازعہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایجنڈے کی سب سے طویل کھلی ہوئی بات ہے۔ یہ سنہ 1947 میں ریاست جموں و کشمیر پر بھارت کے پرتشدد اور غیر قانونی قبضے سے ہوا تھا۔ بین الاقوامی قانون اور جموں و کشمیر کے عوام کی امنگوں کی مکمل خلاف ورزی کرتے ہوئے۔ “اس کے بعد کوئی بھی غیر قانونی اور یکطرفہ عمل جموں و کشمیر کی حیثیت کو ایک متنازعہ علاقے کی حیثیت سے تبدیل نہیں کرسکتا”۔

ایف او کے ترجمان نے کہا کہ ایف او کے بیان میں اس بات کی نشاندہی کی گئی کہ جموں و کشمیر تنازعہ کا واحد حل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کا وفادار نفاذ ہے ، جس میں کشمیریوں کا آزادانہ اور غیرجانبدارانہ ریفرنڈم کے جمہوری طریقہ کار کے ذریعے حق خودارادیت کا ناجائز حق اس تنازعہ میں ، اقوام متحدہ کی سرپرستی کو تسلیم کیا گیا ، بھارتی مقبوضہ علاقہ میں تمام یکطرفہ ہندوستانی اقدامات غیر قانونی تھے۔

اس بات کا اعادہ کیا گیا ہے کہ 5 اگست ، 2019 کو بھارت کی یکطرفہ کارروائیوں ، اور اس کے بعد جموں و کشمیر کے آبادیاتی ڈھانچے کو چوتھے جنیوا کنونشن کی خلاف ورزی میں تبدیل کرنے کی کوششیں ، غیر قانونی اور واضح طور پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی تھیں۔ بیان میں یہ بھی زور دیا گیا ہے کہ گلگت بلتستان کے ساتھ بے بنیاد بھارتی تصادم آئی او سی میں بے گناہ نہتے کشمیریوں کے خلاف بھارتی قابض افواج کے مظالم کی پردہ پوشی نہیں کرسکتا ہے اور نہ ہی وہ عالمی برادری کی توجہ آئی او سی سے ہٹا سکتا ہے۔

ہندوستانی حکومت سے کہا گیا کہ وہ اس علاقے پر غیرقانونی قبضے کو ختم کرنے سمیت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے تحت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں میں شامل خود ارادیت کے حق کو استعمال کرنے سمیت آئی او سی میں تمام غیر قانونی اقدامات کو فوری طور پر مسترد کریں۔ پاکستان آئی او سی میں بھارتی قابض افواج کے ذریعہ انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیوں کی توثیق کرنے کے لئے ، بھارت سے پابندی اور مواصلات کی بندش کو ختم کرنے ، کشمیری نوجوانوں کو غیر قانونی طور پر نظربند کرنے اور کشمیری قیادت کو رہا کرنے اور مسلح افواج جیسے سخت قوانین کو واپس لینے کے لئے کہا گیا ہے۔ آئی او سی میں اسپیشل پاور ایکٹ (اے ایف ایس پی اے) اور پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے) ، اعلامیہ مکمل ہوگیا۔

گلگت بلتستان کی صوبائی حکومت نے بھی جی بی کے بارے میں بھارتی پروپیگنڈے کی تردید کی ہے ، جی بی کے وزیر اطلاعات شمس میر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ گلگت بلتستان پاکستان کا اٹوٹ انگ ہے اور شہری اپنے ملک سے پیار کرتے ہیں۔ شمس میر نے مزید کہا کہ “ہندوستان مقبوضہ جموں و کشمیر سے اقوام متحدہ (یو این) کی توجہ ہٹانے یا کشمیریوں کی آزادی کی جدوجہد کو دبا نہیں سکتا ہے”۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Tabdeeli With Ameer Abbas 29th November 2020

Tabdeeli With Ameer Abbas live telecasted today at Bol News can be watched here online with ease. Today's Tabdeeli With Ameer Abbas...

92 At 8 29th November 2020

92 At 8 live telecasted today at 92 News HD Plus can be watched here online with ease. Today's 92 At 8...

Breaking Point with Malick 29th November 2020

Breaking Point with Malick live telecasted today at HUM News can be watched here online with ease. Today's Breaking Point with Malick...

Naya Pakistan 29th November 2020

Naya Pakistan live telecasted today at Geo News can be watched here online with ease. Today's Naya Pakistan show topic is PDM...

Recent Comments