Home Business Auditor General of Pakistan releases audit report of the Sindh government...

Auditor General of Pakistan releases audit report of the Sindh government for the year 2019-2020

آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے سندھ حکومت کی سال 2019-2020 کی آڈٹ رپورٹ جاری کی

Financial irregularities of more than Rs 163 billion have been revealed in the financial system of Sindh.

The Auditor General of Pakistan has released another alarming audit report for the year 2019-2020. According to report corruption and irregularities of more than 163 billion rupees in Sindh.

The audit report revealed that the PPP government has distributed Rs. 3 billion against the rules to reward employees and employees of their choice, while Rs. The Sindh government has spent a record Rs 113 billion without documentary evidence.

According to the audit report, the Sindh government has given loans of 2 billion rupees to employees and officers who have not yet been repaid. The report also revealed that the Sindh government, despite having its own insurance company, had hired a private insurance company and paid 12 crore Rs to the said private company from the provincial treasury against the rules.

According to the report, the Sindh government did not disclose the record of return of Rs 9 billion, which came in investments, while suspicious payments of Rs 90 million in terms of monthly pension were also revealed. The report also said that Rs 998 million had been spent from the budget.

سندھ کے مالیاتی نظام میں 163 ارب روپے سے زائد کی مالی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے۔

آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے سال 2019-2020 کے لیے ایک اور تشویشناک آڈٹ رپورٹ جاری کی ہے۔ رپورٹ کے مطابق سندھ میں 163 ارب روپے سے زائد کی بدعنوانی اور بے ضابطگیاں۔

آڈٹ رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے 10 کروڑ روپے تقسیم کیے ہیں۔ ملازمین اور ملازمین کو اپنی پسند کے انعامات دینے کے لیے قوانین کے خلاف 3 ارب روپے جبکہ سندھ حکومت نے بغیر دستاویزی ثبوت کے ریکارڈ 113 ارب روپے خرچ کیے ہیں۔

آڈٹ رپورٹ کے مطابق سندھ حکومت نے ایسے ملازمین اور افسران کو 2 ارب روپے کے قرضے دئیے ہیں جو ابھی تک ادا نہیں کیے گئے۔ رپورٹ میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ سندھ حکومت نے اپنی انشورنس کمپنی ہونے کے باوجود ایک نجی انشورنس کمپنی کی خدمات حاصل کی تھیں اور قواعد کے خلاف صوبائی خزانے سے مذکورہ نجی کمپنی کو 12 کروڑ روپے ادا کیے تھے۔

رپورٹ کے مطابق سندھ حکومت نے 9 ارب روپے کی واپسی کا ریکارڈ ظاہر نہیں کیا جو سرمایہ کاری میں آیا جبکہ ماہانہ پنشن کی مد میں 90 ملین روپے کی مشکوک ادائیگیوں کا بھی انکشاف ہوا۔ رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا کہ بجٹ سے 998 ملین روپے خرچ کیے گئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Argentina to get 12 fighter jets from Pakistan

ارجنٹائن پاکستان سے 12 لڑاکا طیارے حاصل کرے گا According to international media reports, Argentina is planning to...

Pakistan has paid a heavy price for standing with US: Imran Khan

پاکستان نے امریکہ کے ساتھ کھڑے ہونے کی بھاری قیمت ادا کی ہے: عمران خان "The US President...

Sindh forms a committee for protection of foreign nationals

سندھ نے غیر ملکی شہریوں کے تحفظ کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دی The Sindh government has formed...

LCCI urges OGRA to review pricing formula of petroleum products

ایل سی سی آئی نے اوگرا پر زور دیا کہ وہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے فارمولے پر نظرثانی کرے

Recent Comments